top of page
Search

پاکستان کا یہ کامیاب پروگرام کیا ہے؟

کامیاب پاکستان پروگرام_معاشرے کے غریب لوگوں کی بہتری کا سفر


پروگرام کا مقصد ہے۔

  • 40 لاکھ گھرانوں کی مدد کریں۔

  • بلاسود قرض کی زیادہ سے زیادہ حد 500,000/- فی گھرانہ ہے۔

  • مالی سال 2021-2022 میں تقریباً 400 ارب روپے کے بلاسود قرضوں کی پیشکش

یہ پروگرام حکومت کی جانب سے معاشرے کے غریب لوگوں کے لیے اور 2023 کے آئندہ انتخابات سے قبل اپنے ووٹروں کو راغب کرنے کے لیے اٹھایا گیا ایک بڑا اقدام ہے۔ یہ پروگرام پاکستان کو ایک فلاحی ریاست بنانے کے وزیر اعظم عمران خان کے ویژن کے مطابق بھی ہے۔ وزیر خزانہ شوکت ترین نے ڈان کو ایک بیان میں بتایا کہ حکومت نے کامیاب پاکستان پروگرام کے تمام فیچرز کو حتمی شکل دے دی ہے اور اسے جولائی کے مہینے میں شروع کیا جائے گا۔ پروگرام کی خصوصیات: کامیاب پاکستان پروگرام کی اہم خصوصیات یہ ہیں:

  • ہاؤسنگ پراجیکٹس میں لوگوں کی مدد،

  • مہارت کی ترقی میں سہولت فراہم کرنا،

  • ہیلتھ کارڈز تک رسائی

  • کاروبار کے لیے بلا سود قرضے۔

  • زرعی خدمات کے لیے بلا سود قرضے۔

"کاشتکاروں کو فصل کی کٹائی اور دیگر کاروباری مواقع کو بہتر بنانے کے لیے بلاسود قرضے ملیں گے،" شوکت ترین

تاہم وزیر خزانہ نے واضح کیا کہ قرضوں کی تقسیم ایک سال میں نہیں بلکہ مدت کے دوران کی جائے گی۔ وزیر نے مزید روشنی ڈالی کہ رواں مالی سال 2021-22 میں تقریباً 300 ارب سے 400 ارب روپے کے بلاسود قرضے دیئے جائیں گے، انہوں نے مزید کہا کہ یہ رقم بلاسود قرضوں پر سبسڈی فراہم کرنے کے لیے بھی بجٹ میں رکھی گئی ہے۔ پروگرام اور قرض حاصل کرنے کے طریقہ کار کے بارے میں مزید تفصیلات کے لیے https://www.kamyabpakistan.org/blog/categories/sustainable-development کو سبسکرائب کریں۔

bottom of page